جانیے بل گیٹس کی خواہش

نیویارک مائیکروسافٹ کے بانی اور دنیا کے امیر ترین شخص بل گیٹس کو دیکھ کر ہرانسان کی یہی خواہش ہو گی کہ کاش وہ بھی اتنا ہی امیر ہوتا کہ اپنی تمام خواہشات پوری کر سکتا، لیکن خواہشات کبھی کبھی بادشاہوں کی بھی پوری نہیں ہوتیں. بل گیٹس دنیا بھر میں مخیر کاموں میں کافی سرگرم ہیں اور وہ غربت کے خاتمے، تعلیم کے فروغ، زندگیوں کے تحفظ اور عوامی صحت کو بہتر بنانے کے خواہشمند ہیں۔ نیویارک کے دوری کے دوران وزیر اعظم نواز شریف نے بھی بل گیٹس سے پاکستان میں انسداد پولیو سے متعلق ایک اہم ملاقات کی. بل گیٹس نے ایک تقریب کے دوران اپنی سب سے بڑی خواہش کا اظہارسےپردااُٹھا دیا.ان کا کہنا تھا کہ اگر ان کے بس میں ہو تو جو وہ مسئلہ فوری طور پر حل کرنا چاہیں گے وہ کوئی بیماری یا غربت نہیں بلکہ غذا ہے۔بل گیٹس کا کہنا تھا کہ اگر ان کے پاس جادو کی چھڑی ہو جس سے وہ کوئی بھی ایک مسئلہ حل کرسکتے ہو تو وہ اسے غذائیت بخش خوراک کے مسئلے کو حل کرنے کے لیے استعمال کریں گے۔انہوں نےکہا کہ اکثر مسائل یا بیماریوں کاموجب بچوں کو مناسب خوراک یا درست غذائیت کی عدم فراہمی ہے جس میں مناسب حل کے بعد ہی بہتری لائی جا سکتی ہے۔ان کا کہنا تھا کہ ہر سال پانچ سال سے کم عمر 60 لاکھ بچوں کی اموات میں سے نصف کی وجہ خوراک سے متعلق مسائل ہیں اور مناسب غذایت کی فراہمی سے ان زندگیوں کو بچایا جاسکتا ہے۔بل گیٹس کے مطابق ”اگرچہ کم خوراک ملنے پر لاکھوں بچے زندہ بھی رہ جاتے ہیں مگر وہ جسمانی یا ذہنی طور پر صحیح نشوونما حاصل کرنے میں ناکام رہتے ہیں۔“

عالمی ادارہ صحت کے حالیہ تخمینے کے مطابق دنیا بھر کے چوتھائی بچے جسمانی اور ذہنی طور پر مناسب نشوونما پانے سے محروم ہیں جس کی وجہ خوراک کی کمی ہے اور اس کے منفی اثرات کا سامنا انہیں پوری زندگی ہوگا۔

Leave a comment